barseem ki kasht aor rate/ برسیم کا طریقہ کا شت اور قیمت


لحمیات اور کیلثیم سے بھر پور برسیم کی کاشت کا طریقہ

برسیم کی کاشت

برسیم نہایت مقوی اور  غذا ئیت سے بھر پور  چا رہ ہے۔

اکثر اسے اکیلا ہی کاشت کیا جا تا ہے۔اور بعض اوقات اس کے ساتھ سرسوں اور جئی بھی کاشت کی جاتی ہے۔برسیم کا پودا زمین کی ذرخیزی بڑھانے میں بہت زیادہ مدد گار ہےکیوں کہ اس کے پودے کے ساتھ  جڑوں میں موجود گانٹھے ہوا سے نائٹروجن  حاصل کرتی ہیں۔برسیم کے کھیتوں میں اگلے سال گندم کاشت کرنے سے اس کی پیداوار میں 5 سے 10 من تک اضافہ ہو سکتا ہے کیوں کہ برسیم کی وجہ سے  اُس زمین کی زرخیزی بڑھ جاتی ہے اور جڑی بوٹیوں کا بھی  خاتمہ ہو جاتا ہے۔

برسیم سے دودھ دینے والے جانوروں کے دودھ دینے کی صلاحیت میں بہت زیادہ اضافہ ہوتا ہے۔اس وجہ سے اسے چاروں کا بادشاہ کہا جاتا ہے۔

اقسام

بنوں  والا برسیم شماہی لوسرن کے برابر چلتا ہے۔

جبکہ عام برسیم گندم کی اپریل کے آخر تک چلتا ہے۔

آب و ہوا

یہ پنجاب کے تمام علاقوں میں کاشت کیا جا سکتا ہے۔سخت سردی میں اس کی بڑھوتری متاثر ہوتی ہے۔

شرح بیج:

ایک کنال رقبہ کے لیے ڈیڑھ کلو برسیم کافی ہے۔اگر اس کے ساتھ جئی اور سرسوں کاشت کرنی ہو تو ایک کنال کے لیے  1کلو جئی اور200 گرام سرسوں کے ساتھ 1 کلو برسیم استعمال کریں۔

وقت کاشت :

برسیم کے کاشت کا بہترین وقت 15 ستمبر سے بعد سے لے کر وسط دسمبر ہے۔ اگیتی کاشت زیادہ کٹائیاں دیتی ہے جبکہ لیٹ کاشت کم کٹایاں دیتی ہے۔

کھادوں کا استعمال:

برسیم کی بھر پور پیدا وار حاصل کرنے کے لیے  کھادوں کا مناسب ،متوازن اور بر وقت استعمال ضروری ہے۔

پودے کو سب سے زیادہ نائٹروجنی کھاد کی ضرورت ہوتی ہے۔نائٹروجن پودوں کے سبز رنگ اور لحمیات کا لازمی جزو ہے۔یہ پودے کی بڑھوتری میں اہم کرداد ادا کرتی ہے۔ہوا میں 78 فیصد نائٹروجن موجود ہے مگر پودے براہ راست استعمال کرنے سے قاصر ہیں۔مگر  کچھ پو دوں میں  قدرت نے یہ نظام رکھا ہے کہ وہ ہوا سے نائٹروجن حاصل کر سکتے ہیں۔برسیم کا تعلق بھی انہیں فصلوں سے ہے۔

غذائی اعتبار سےنائٹروجن کے بعد فاسفورس کا نمبر آتا ہے۔فاسفورس جڑوں  کی بڑھوتری کے علاوہ پھولوں اور بیج کے بننے میں اہم کرداد ادا کرتی ہے۔نائٹروجن کے ساتھ اس کا استعمال  کھادوں کی کارکردگی  کو بڑھا دیتا ہے۔

برسیم کی فصل کے لئے کھیت کی تیاری کے دوران گوبر کی گلی سڑی کھاد کم از کم ایک ماہ پہلے3 سے 4 ٹرالیاں ڈال کہ اچھی طرح ہل چلائے جائیں۔

آبپاشی:

بجائی بذریعہ چھٹہ کر کہ پانی لگا دیں۔پہلا پانی ایک ہفتہ بعد اور باقی حسب ضرورت  لگائیں سردیوں میں جلد پانی لگانے سے کورے کے اثر سے تھوڑا محفوظ رہا جا سکتا ہے۔

قیمت برسیم فی کلو :

بنوں والا  400 روپے ۔ شیخوپورہ 250 اور 180 روپے

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *